7 سال سے جیتنے کی کوشش کررہا تھا، نوح دستگیر

Breaking News: کامن ویلتھ گیمز میں گولڈ میڈل جیتنے والے نوح دستگیر بٹ نے کہا ہے کہ اللّٰہ کا شکر ادا کرتا ہوں، اپنے جذبات بیان نہیں کرسکتا۔ حکومت سے کہنے کی ضرورت نہیں، میں نے اپنا کام کردیا، اب وہ کر کے دکھائیں۔پاکستان کے لئے میڈل جیتنے کے بعد جیو نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے نوح دستگیر بٹ نے کہا کہ 7 سال سے اس گیم کو جیتنے کی کوشش کررہا تھا۔ اتنا وزن اٹھانا آسان نہیں ہوتا، 12 سے 13 سال کی محنت کے بعد یہ کر پایا۔

نوح دستگیر بٹ نے کہا کہ پچھلی بار برانز میڈل لیا تھا مگر اس بار پاکستان کا نام روشن کیا۔

نوح دستگیر بٹ نے اپنے اہل خانہ اور ٹریننگ سے متعلق بات کرتے ہوئے بتایا کہ گھر میں ہی والد صاحب ٹریننگ کراتے ہیں، میرے والد بھی انٹرنیشنل ویٹ لفٹر تھے اور بھائی بھی اس کھیل میں ہے۔
واضح رہے کہ کامن ویلتھ گیمز 2022 میں نوح دستگیر بٹ نے مجموعی طور پر 405 کلو گرام وزن اٹھا کر گولڈ میڈل جیتا ہے۔

مزیدخبروں کے لیے ہماری ویب سائٹ ہمارخور وزٹ کریں۔