برطانوی بادشاہ چارلس میں کینسر کی تشخیص

بکنگھم پیلس سے جاری بیان میں بتایا گیا ہے کہ برطانیہ کے بادشاہ چارلس سوم (King Charles III) میں کینسر کی تشخیص ہوئی ہے۔

خبررساں ادارے ’رائٹرز‘ کی رپورٹ کے مطابق بیان میں کہا گیا ہے کہ ستمبر 2022 میں اپنی والدہ ملکہ الزبتھ کی موت کے بعد بادشاہ بننے والے شاہ چارلس اپنے علاج کے بارے میں مکمل طور پر مثبت رویہ رکھتے ہیں اور جلد از جلد دوبارہ عوامی ذمہ داریاں مکمل طور پر نبھانے کے منتظر ہیں۔

شاہ چارلس نے (King Charles ) گزشتہ ماہ ہسپتال میں 3 راتیں گزاری تھیں جہاں ان کے بڑھے ہوئے پروسٹیٹ کا آپریشن کیا گیا تھا۔

بکنگھم پیلس سے جاری بیان میں بتایا گیا کہ ہسپتال میں دوران علاج کینسر کی تشخیص ہوئی، بیان میں اس حوالے سے مزید تفصیلات نہیں بتائی گئیں کہ بادشاہ میں کس قسم کے کینسر کی تشخیص ہوئی ہے، تاہم شاہی خاندان کے ذرائع کے مطابق یہ پروسٹیٹ کینسر نہیں ہے۔

یان کے مطابق بادشاہ نے پیر سے باقاعدہ علاج شروع کر دیا ہے، اس دوران انہیں ڈاکٹرز کی جانب سے اپنی تمام عوامی مصروفیات ملتوی کرنے کی تجویز دی گئی ہے، اس پورے عرصے کے دوران وہ معمول کے مطابق ریاستی امور اور سرکاری کاغذی کارروائی جاری رکھیں گے۔

برطانوی وزیر اعظم رشی سوناک نے ’ایکس‘ پر بادشاہ چارلس کے لیے اپنی نیک تمناؤں کا اظہار کیا۔

انہوں نے کہا کہ مجھے کوئی شک نہیں ہے کہ وہ عنقریب مکمل صحتیاب ہوجائیں گے اور میں جانتا ہوں کہ پورا ملک ان کے لیے نیک خواہشات کا اظہار کرے گا۔

مزیدخبروں کے لیے ہماری ویب سائٹ ہم مارخور وزٹ کریں۔