لبیک اللّٰھم لبیک کی صدائیں، حج کا رکنِ اعظم وقوفِ عرفہ ادا کیا جا رہا ہے

آج حج(Hajj 2022) کا رکنِ اعظم وقوفِ عرفہ ادا کیا جا رہا ہے، دنیا بھر سے حج کے لیے سعودیہ عرب پہنچنے والے عازمینِ حج نمازِ فجر کے بعد منیٰ سے میدانِ عرفات پہنچ چکے ہیں۔

عازمینِ حج نے گزشتہ رات منیٰ میں دنیا کی سب سے بڑی خیمہ بستی میں قیام کیا، اس سال دنیا بھر کے 10 لاکھ اور پاکستانی تقریباً 80 ہزار عازمین حج میدانِ عرفات میں عبادت میں مصروف ہیں۔


مسجد نمرہ سے خطبۂ حج پاکستانی وقت کے مطابق ایک بج کر 40 منٹ پر دیا جائے گا۔

عازمینِ حج میدان عرفات میں عبادات، توبہ استغفار سمیت ظہر اور عصر کی قصر نمازیں ادا کریں گے۔

واضح رہے کہ آج کے دن دونوں باجماعت نمازوں کے لیے ایک ہی اذان دی جاتی ہے جبکہ نماز کے لیے ظہر اور عصر کی اقامت الگ الگ ہو گی۔


عازمین حج غروب آفتاب کے وقت اذان مغرب سے قبل میدان عرفات سے مزدلفہ کے لیے روانہ ہوجائیں گے جہاں وہ نمازِ عشاء کے وقت مغرب اور عشاء کی نمازیں ایک ساتھ ادا کریں گے۔

عازمین حج مزدلفہ میں رات قیام اور رَمی کے لیے کنکریاں جمع کریں گے اور فجر کی نماز ادا کرکے رَمی ( بڑے شیطان کو کنکریاں مارنے) کے لیے جمرات روانہ ہوجائیں گے۔

اس کے بعد حجاج کرام قربانی کی سنت ادا کریں گے اور پھر حلق کروا کے احرام اتار کر اس کی پابندیوں سے آزاد ہوجائیں گے۔