دعا زہرا کی عمر 15سے 16سال کے درمیان ہے، نئی میڈیکل رپورٹ میں انکشاف

کراچی سے لاہور جا کر پسند کی شادی کرنے والی لڑکی دعا زہرا(Dua Zahra) کی عمر کے تعین سے متعلق عدالتی حکم پر دوبارہ کروائی گئی میڈیکل رپورٹ عدالت جمع کروا دی گئی ہے۔

دعا زہرا کی نئی میڈیکل رپورٹ پر سماعت آج جوڈیشل مجسٹریٹ شرقی کی عدالت میں ہوئی، اس دوران مقدمے کے مدعی اور وکیل بھی عدالت میں پیش ہوئے۔

میڈیکل بورڈ نے دعا زہرا کی نئی میڈیکل رپورٹ کراچی کی مقامی عدالت میں جمع کروائی جس میں دعا زہرا کو ’مائنر‘ یعنی کہ نابالغ لکھا گیا ہے، نئی میڈیکل رپورٹ کے مطابق دعا زہرا کی عمر 15 سال سے زیادہ اور 16 سال سے کم ہے۔

نئی میڈیکل رپورٹ میں دعا زہرا کی عمر دانتوں کے معائنے کے مطابق 13 سے 15 سال کے درمیان ہے جبکہ ریڈیولوجیکل معائنے کے مطابق دعا زہرا کی عمر 16 سے 17 سال ہے۔

میڈیکل بورڈ کےاتفاق رائے کے مطابق دعا کی عمر 15 سے 16 سال کے درمیان ہے۔

وکیل مدعی جبران ناصر کا اپنے مؤقف میں کہنا ہے کہ دعا زہرا کی عمر قریب ترین پندرہ سال ہے، اس لڑکی سے کہلوایا جا رہا تھا کہ اس کی عمر 18 سال ہے۔

جبران ناصر نے مزید کہا کہ پہلے میڈیکل بورڈ نے دعا زہرا کی عمر 17 سال بتائی تھی اس کی بھی نفی ہوگئی ہے۔

واضح رہے کہ دعا زہرا کی عمر کے تعین کے لیے محکمۂ سندھ کی جانب سے 10 رکنی میڈیکل بورڈ بنایا گیا تھا۔

عمر کے تعین کے لیے دعا زہرا کی بتیسی، کلائی اور کہنی کے ایکسرے لیے گئے تھے۔

اس سے قبل سندھ ہائی کورٹ کے حکم پر کیے گئے ٹیسٹ میں سامنے آیا تھا کہ دعا زہرہ کی عمر 16 سے 17 سال کے درمیان ہے۔

دوسری جانب دعا زہرہ کے والد کا دعویٰ تھا کہ دعا کی عمر 14 سال ہے، انہوں نے عدالت میں بیٹی دعا زہرا کی پیدائش کا سرٹیفکیٹ اور پاسپورٹ بھی پیش کیا تھا۔