سینئر صحافی اور اینکر پرسن ارشد شریف کے قتل پر ردعمل

نیروبی ( نیوز ڈیسک) – سینئر صحافی اور اینکر پرسن ارشد شریف (Arshad Sharif ) کینیا میں پولیس کی گولی لگنے سے جاں بحق ہوگئے۔

سینئر صحافی اور اینکر ارشد شریف کینیا میں زندگی کی بازی ہارگئے۔ اہلیہ جویریہ صدیق نے ارشد شریف کی موت کی تصدیق کردی۔ ٹوئٹر پر لکھا کہ آج میں نے اپنا دوست، شوہر اور پسندیدہ صحافی کھو دیا۔

انہوں نے ارشد شریف کی کینیا کے مقامی اسپتال میں لی جانے والی آخری تصویر، فیملی کی تصویریں، ذاتی تفصیلات کو شیئر نہ کرنے کی بھی اپیل کردی۔

معروف صحافی کے انتقال پر ان کے ساتھیوں، صحافی برادری اور سیاستدانوں کی جانب سے اظہار تعزیت کیا گیا۔

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے ارشد شریف کی وفات کو صحافت اور پاکستان کے لیے عظیم نقصان قرار دے دیا۔ وزیراعظم شہباز شریف نے ارشد شریف کے اہلِ خانہ سے اظہار تعزیت کیا، لکھا کہ صحافی ارشد شریف کی المناک موت کی خبر پر شدید افسردہ ہوں۔

سابق وزیراعظم عمران خان، وزیر اطلاعات، وزیر داخلہ، وزیر خارجہ، پی ٹی آئی رہنماؤں نے بھی ارشد شریف کی موت کی خبر پر گہرے صدمے اور افسوس کا اظہار کیا۔ سابق وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید نے ارشد شریف کے گھر جاکر تعزیت کی۔

اسلام آباد ہائی کورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللہ نے صحافی کے قتل کی تحقیقات کیلئے جوڈیشل کمیشن کے قیام سے متعلق درخواست پرسماعت کی۔ وزارت داخلہ اور وزارت خارجہ کے سیکرٹریز کو ارشد شریف کی فیملی سے رابطے کے لئے فوری طور پر نمائندے مقرر کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا ارشد شریف کی فیملی کو مطمئن کرنے کیلئے تمام اقدامات کئے جائیں۔ کیس کی مزید سماعت کل دوبارہ ہوگی۔

مزیدخبروں کے لیے ہماری ویب سائٹ ہمارخور وزٹ کریں۔